پیر. دسمبر 9th, 2019

شوبز انڈسٹری میں میرا جنسی استحصال کیا جاتا رہا : ایشا کوپیکر

ممبئی (آن لائن ) ”عشق سمندر“ اور‘ ’خلاص“ جیسے بالی ووڈ کے ٹرینڈ سیٹر آئٹم گانوں میں پرفارمنس کرنے والی بولی وڈ اداکارہ 43 سالہ ایشا کوپیکر نے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں متعدد ساتھی اداکاروں نے ’جنسی تعلقات‘ استوار کرنے کی پیش کش کی۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ شوبز انڈسٹری میں ان کا جنسی استحصال کیا جاتا رہا اور انہیں صرف آئٹم سانگ کے لیے کاسٹ کیا جاتا رہا۔ایشا کوپیکر اگرچہ گزشتہ کچھ عرصے سے فلمی دنیا سے دور ہیں، تاہم ماضی میں انہیں ’خلاص‘ آئٹم گرل اور ’عشق سمندر‘ گرل کے نام سے جانا جاتا رہا ہے۔ایشا کوپیکر نے متعدد فلموں میں نہ صرف آئٹم سانگ کیے بلکہ انہوں نے انتہائی بولڈ کردار بھی ادا کیے، تاہم انہیں زیادہ تر مختصر کردار ہی دیے جاتے رہے۔ایشا کوپیکر کو جہاں بولی وڈ میں مختصر کردار دیے جاتے رہے یا انہیں معاون ہیروئن کے طور پر کاسٹ کیا جاتا رہا، وہیں وہ تامل اور تیلگو سمیت دیگر بھارتی زبانوں میں بننے والی فلموں میں اہم کرداروں میں دکھائی دیں۔ایشا کوپیکر نے اداکاری کی شروعات بھی تامل فلموں سے کی تھی، تاہم 2000 میں وہ بولی وڈ میں آئٹم گرل کے طور پر سامنے آئیں اور مشہور تھرلر فلم ’کانٹے‘ میں ’عشق سمندر‘ گانے پر پرفارمنس کرکے مشہور ہوئیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Chat with us on WhatsApp